1. #1

    جاگتی رات کے ہونٹوں پہ فسانے جیسے


    جاگتی رات کے ہونٹوں پہ فسانے جیسے
    اِک پل میں سمٹ آئے ہوں زمانے جیسے

    عقل کہتی ہے بُھلا دو، جو نہیں مل پایا
    دل وہ پاگل کہ کوئی بات نہ مانے جیسے

    راستے میں وہی منظر ہیں پرانے اب تک
    بس کمی ہے تو، نہیں لوگ پرانے جیسے

    آئینہ دیکھ کے احساس یہی ہوتا ہے
    لے گیا وقت ہو عمروں کے خزانے جیسے

    رات کی آنکھ سے ٹپکا ہوا آنسو وصی
    مخملی گھاس پہ موتی کے ہوں دانے جیسے

  2. # ADS
    Circuit advertisement جاگتی رات کے ہونٹوں پہ فسانے جیسے
    Join Date
    Always
    Posts
    Many
     

Visitors found this page by searching for:

Nobody landed on this page from a search engine, yet!
SEO Blog

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •  

Log in

Log in